comintour.net
stroidom-shop.ru
obystroy.com
лапароскопия паховой грыжи
 چھاپیے 
مجمع طلاب روندو,

مجمع علما و طلاب روندو کے چوتھا صدارتی الیکشن جمعہ کے روز قم المقدسہ میں منعقد ہوا جس میں چار امیدوار کھڑے تھے حجت الاسلام محمد عقیل ترابی، حجت الاسلام نثار حسین اتحادی، حجت الاسلام سید زمان حیدر موسوی اور حجت الاسلام محمد وصیل فیاضی۔
قبلہ عقیل ترابی نے آخری وقت میں الیکشن سے دستبردار ہوئے اور اس طرح سے باقی تین امیدواروں کے درمیان الیکشن ہوا اور پہلے مرحلے میں آقای اتحادی اور آقای موسوی دونوں کے ووٹ برابر رھے جسکی وجہ سے دوسرے مرحلے میں ان دونوں کے درمیان دوبارہ انتخابات ہوئے۔
اور حجت الاسلام نثار حسین اتحادی بھاری اکثریت سے ووٹ لیکر آیندہ دو سالوں کے لیے صدر منتخب ہوئے۔


الیکشن سے پہلے سابقہ صدر حجت الاسلام احمد خان غفاری نے اپنی دو سالہ کارکردگی پیش کیا اور برادران پر زور دیا کہ صرف صدر انتخاب کرنے سے کچھ نہیں ہوتا بلکہ آنے والے صدر کی حمایت اور اس کے ساتھ تعاون بہت ضروری ہے۔

اس کے بعد صدارتی امیدواروں میں سے ہر ایک نے آیندہ دو سالوں کے لیے اپنا منشور پیش کیا اور مختصر وقت کے لیے خطاب کیا۔
اس کے بعد الیکشن کمیشن کے چیرمین ڈاکٹر موسی عرفانی صاحب نے الیکشن کے شرایط اور ضوابط پیش کیے اور باقاعدہ طور پر الیکشن کا آغاز ہوا۔
اور آخر میں شیخ نثار حسین اتحادی صاحب کو آیندہ دو سالوں کے لیے صدر کے عنوان سے منتخب ہونے پر تبریک عرض کیا۔
اس کے بعد سابقہ صدر قبلہ غفاری صاحب نے نومنتخب صدر سے حلف لیا اور اس کے بعد منتخب شدہ صدر نے طلاب و علما کرام سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ روندو میں بہت ساری مشکلات کا سامنا ہے علما کے باہمی تعاون اور اتحاد کی کمی ہے اور میری کوشش ہوگی کہ ان دو سالوں میں اس کو بحال کرنے پر زور دونگا۔

مجمع علما وطلاب روندو کا صدر دو سالوں کے لیے انتخاب ہوتا ہے اور وہ اپنی سات رکنی کابینہ بنا کر مجمع کے امور کو اس دو سال کی مدت کے لیے کام کرتا ہے۔

#مجمع_علما_و_طلاب_روندو

Submit to DeliciousSubmit to DiggSubmit to FacebookSubmit to Google PlusSubmit to StumbleuponSubmit to TechnoratiSubmit to TwitterSubmit to LinkedIn